Simplifying Train Travel

دمن اور دیو کے 6 ایسے ساحل جہاں آپ کو ضرور جانا چاہئے

بھارت میں ساحلوں کا مطلب صرف ریت اور سمندر کا کنارہ نہیں ہے، بلکہ اس کا مطلب چاٹ کی ریڑھیاں، کھلونے بیچتے لوگ اور گنے کے رس کی دکانیں بھی ہے۔ کسی کے لئے ساحل سمندر کا مطلب صاف شفاف پانی اور ناریل کے اونچے درخت ہیں، تو دوسروں کے لئے اس کا مطلب پانی والے کھیل اور اس طرح کی دیگر مہم جوئیاں ہیں۔ لیکن اگر آپ ایک کامل نمونہ کی تلاش میں ہیں تو دمن اور دیو کے سمندری ساحل آپ کی مطلوبہ منزل ہیں۔

 

دمن کے بہترین سمندری ساحل

دیوکا ساحل

Urdu Travel Blog

ایک لمبے خطِ ساحل والا دمن کا یہ سمندری کنارہ فیملی کے ساتھ لطف اٹھانے کے لئے بہترین مقام ہے۔ دیوکا ساحل پر پانی میں کچھ چٹانیں بھی ہیں اس لئے ہر جگہ تیراکی کی اجازت نہیں ہے۔ یہاں کا تفریحی پارک بھی بہت خوبصورت ہے اور بچوں کو بے حد پسند آتا ہے۔ دیوکا ساحل پر سمندر کی طرف دیکھتے ہوئے کافی کی چسکیاں لینا یا گرما گرم تلی ہوئی مچھلیوں سے لطف اندوز ہونا آپ کی چھٹیوں کے مزہ کو دوبالا کر دیتا ہے۔

اہم معلومات: اس ساحل پر سنہری ریت نہیں ہے، بلکہ یہ ساحل کالی مٹی پر مشتمل ہے۔

جام پور ساحل

Jampore-Beach

جام پور ساحل ایک طرح سے دیوکا ساحل سے بالکل مختلف ہے، لیکن اس کی خوبصورتی نرالی ہے۔ دمن کے جنوبی حصہ میں واقع یہ ساحل ان لوگوں کے لئے ہے جو راحت وسکون کی تلاش میں ہیں۔ یہاں پر کوئی تفریحی پارک یا ایک دوسرے سے گتھم گتھا کھانوں کی ریڑھیاں نہیں ہیں جو آپ کی توجہ اپنی جانب کھینچیں۔ اس کے برخلاف، اگر آپ آرام کرنا چاہتے ہیں یا بحر عرب کے ٹھنڈے پانی میں تیرنا چاہتے ہیں یا جنس کے درختوں کے سایہ میں بیٹھنا چاہتے ہیں، تو جام پور ساحل ہی آپ کی منزل ہے۔

مشورہ: اس ساحل پر سورج غروب ہونے کا منظر بہت دلکش ہوتا ہے، اس لئے اپنے سفر کی منصوبہ بندی کرتے وقت یہ بات ذہن میں رکھیں

دیو کے بہترین سمندری ساحل

ناگوا ساحل

Nagoa Beach

ماہی گیروں کا یہ چھوٹا سا گاؤں دیو کے ساحلوں کا ایک شاندار تجربہ پیش کرتا ہے۔ گھوڑے کی شکل میں بنا ہوا ناگوا ساحل سیاحوں کی توجہ کا بڑا مرکز ہے، کیونکہ یہاں پر سیاحوں کی کشش کے لئے کافی کچھ ہے۔ یہاں پر کیلے کے پیڑ کی کشتیوں کی سواری کرنے، پیرا سیلنگ کرنے، جیٹ اسکی انگ کرنے اور سرفنگ کرنے کی سہولیات موجود ہیں۔ یہاں پر آپ کو جگہ جگہ ناریل اور بُھٹے بیچنے والے ملیں گے۔ انہی خصوصیات کی وجہ سے دیو کا سفر کرنے والے سیاحوں کے درمیان ناگوا ساحل سب سے زیادہ مقبول ہے۔

اہم معلومات: ناگوا کا معنی “نیا گوا” ہے۔ سامراجی نظام حکومت کے دوران گوا کے بہت سے خاندان اس ساحل کے اطراف میں آ کر آباد ہو گئے تھے۔

چکرتیرتھ ساحل

Chakratirth-Beach

دیو کے لگ بھگ وسط میں واقع چکرتیرتھ ساحل ان لوگوں کے لئے ہے جو تنہائی کی تلاش میں ہیں۔ یہ ساحل بالکل پر سکون ہے اور کناروں پر چٹانوں کا سلسلہ ہے جس کی وجہ سے یہ دوسرے ساحلوں سے مختلف نظر آتا ہے۔ تصویریں لینے کے لئے اس ساحل پر بے انتہا خوبصورت پس منظر اور بے حد دلکش نظارے ہیں۔ دیو میں سورج غروب ہونے کا مقام اسی ساحل پر واقع ہے، اور یہ کہنے کی ضرورت نہیں ہے کہ آپ بالکل نہیں چاہیں گے کہ آپ یہاں پر سورج غروب ہونے کا منظر نہ دیکھ سکیں۔

اہم معلومات: چکرتیرتھ کا نام ساحل پر واقع بھگوان کرشن کے ایک مندر کے نام پر رکھا گیا ہے۔ اس مندر سے بہت ساری افسانوی کہانیاں جڑی ہوئی ہیں۔

گھوگھلا ساحل

Ghoghla-Beach

دیو سے 15 کلومیٹر کی دوری پر واقع گھوگھلا ساحل بھی ان مقامات میں سے ہے جہاں دیو کا سفر کرنے والے ہر شخص کو ضرور جانا چاہئے، کیونکہ یہاں پر راحت وسکون کا بے مثال تجربہ حاصل ہوتا ہے۔ یہاں پر زیادہ مقبول ناگوا ساحل کی طرح بھیڑ بھاڑ نہیں ہوتی ہے، لیکن یہاں پر بھی آپ پانی والے کھیلوں کا لطف اٹھا سکتے ہیں۔ تیراکی کا شوق رکھنے والوں کے لئے گھوگھلا ساحل ایک مثالی مقام ہے جہاں آپ بچوں کے ساتھ اچھا وقت گزار سکتے ہیں۔ اور اگر آپ خوش قسمت ہوئے تو ہو سکتا ہے آپ کو یہاں ڈالفن بھی دیکھنے کو مل جائیں۔

اہم معلومات: شادی سے قبل کی فوٹوگرافی کے لئے اس ساحل نے ایک بہترین مقام کے طور پر مقبولیت حاصل کر لی ہے

جالندھر ساحل

Jallandhar-Beach

مختلف جگہوں پر ساحلوں کی جو خیالی تصویریں نظر آتی ہیں، ناریل کے درختوں سے گھرا ہوا جالندھر ساحل ان تصویروں کی حقیقی عکاسی کرتا ہے۔ یہاں بھیڑ بھاڑ بالکل نہیں ہے اور ساحل ایک دم پر سکون اور صاف وشفاف ہے۔ ناریل کے درختوں کے پتوں کے درمیان سے افق کو دیکھنے کا جو لطف ہے وہ ناقابل بیان ہے۔

اہم معلومات: اس ساحل کا نام قریب ہی میں واقع ایک آستانہ سے موسوم ہے جو ایک افسانوی شیطان “جالندھر” کا ہے۔ اس شیطان کو بھگوان کرشن نے قتل کیا تھا۔

تو کیا آپ دمن اور دیو کے ساحلوں کی تازہ نمکین ہوا میں سانس لینا چاہیں گے؟


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *