Insights into simplifying train travel

سات سو پہاڑیوں کا گھر- سارنڈا کے جنگل

ہمارے ملک میں ایسے کئی انوکھے مقام ہیں جہاں کی خوبصورتی بس دیکھتے ہی بنتی ہے۔ سیاحت کے نقطہ نظر سے بھی یہ مقام بہت خوشحال ہے۔ ایسے میں اگر آپ خوبصورت جھرنوں، پہاڑوں اور گھنے جنگلوں میں گھومنے کے شوقین ہیں تو سارنڈا کے جنگل آپ کے لئے مناسب جگہ ہے۔ قدرت کے شاندار نظاروں سے بھرپور سات سو پہاڑیوں اور گھنے جنگلوں کا یہ گھر دلکش مناظر اور دلچسپی سے بھرا ہوا ہے۔ سارنڈا کے لغوی معنی سات سو پہاڑیاں ہیں۔

جھارکھنڈ کے مغرب سنگھ بھوم ضلع سے تقریبا 70 کلومیٹر دور واقع سارنڈا تقریبا 820 مربع کلومیٹر پر پھیلا گھنا جنگل ہے.۔ خاموشی میں ڈوبی اس جنگل میں ہریالی اور خوبصورتی کا بے مثال میل دیکھنے کو ملتا ہے۔ سارنڈا کا کچھ حصہ اڑیسہ اور چھتیس گڑھ کی سرحد سے بھی ملا ہوا ہے۔ دلکش سات سو پہاڑیوں سے گھرا یہ جنگل پورے ایشیا میں سال (سكھوا) درخت کی کثیر تعداد کے لئے بھی جانا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ یہاں آم، جامن، بانس، کٹھل اور پلاش کے بھی متعدد درخت ہیں۔ اونچے، سایہ دار، پھل دار ان گنت پیڑوں کا غلبہ یہاں کچھ ایسا ہے کہ سورج کی کرنیں بھی آنے سے گھبراتی ہیں۔ وہیں پلاش کے سرخ پھول جب یہاں کی زمین کو چھوتے ہے تو لگتا ہے کہ کسی نے سرخ قالین بچھا دیا ہو۔

Palash-Flower

جانوروں-پرندوں کا پسندیدہ آشیانہ
بات اگر سارنڈا جنگل کے جانوروں-پرندوں کی کریں تو ہاتھی یہاں کثیر تعداد میں ملتے ہیں۔ اس کے علاوہ چیتا، جنگلی بھینس، سانبھر، ریچھ اور ہرن بھی کافی تعداد میں پائے جاتے ہیں۔گھنے جنگل کی وجہ سے یہ مقام کئی نسلوں کے پرندوں کا بھی پسندیدہ گھر ہے۔ تاہم اب ان کی تعداد میں کمی آئی ہے۔

Elephants-in-Saranda

ہرنی آبشار پكنك اسپاٹ
سارنڈا کے گھنے جنگلوں کے درمیان واقع 121 فٹ کی بلندی سے گرتے ہرنی آبشار کی رومانی روانی قدرت کے خوبصورت نظارے کا احساس کراتی ہیں۔ وہیں پہاڑی کے اوپر ویو پوائنٹ میں جانے کے لئے سيڑھياں بھی بنی ہوئی ہیں جہاں سے یہ نظارہ کافی خوشگوار لگ رہا ہے۔ جاڑےکے دنوں میں جہاں پكنك منانے والوں کا تانتا لگا یہاں رہتا ہے۔ وہیں موسم گرما میں بھی اس جھرنے کے نرم پانی میں موج مستی کرنے والوں کی تعداد میں کوئی کمی نہیں ہوتی۔

Hirni-Falls

کس طرح پہنچیں
جھارکھنڈ کے دارالحکومت رانچی سے اس کی دوری 90 کلومیٹر ہے۔ وہیں رانچی سے کچھ دور واقع کھونٹی نامی مقام سے اس کی دوری محض 20 کلومیٹر ہے۔ ہرنی آبشار ہرنی نامی گاؤں میں واقع ہے۔ ہرنی فالس گھومنے کے علاوہ سیاح 3 کلومیٹر دور بنے ڈیئر پارک اور 3.5 کلومیٹر دور واقع خوبصورت راک گارڈن کا مزہ بھی لے سکتے ہیں۔

کہاں رکیں
سیاحوں کے رکنے کے لئے رانچی کے علاوہ رانیہ، چكردھرپور اور کھونٹی میں کئی گیسٹ ہاؤس اور ہوٹل دستیاب ہے۔

Saranda-Road

احتیاطی تدابیر
بھلے ہی گھنے جنگلوں میں گھومنے کی دلچسپی آپ کو خاصا حوصلہ افزائی کرتا ہو لیکن یہاں اندھیرے کے بعد گھومنے پھرنے کا پروگرام نہ بنائیں۔ ساتھ ہی ہرنی جھرنا کے زیادہ قریب جانے سے بچیں کیونکہ یہ خطرناک ثابت ہو سکتا ہے۔


Leave a Comment

Required fields are marked *