Insights into simplifying train travel

ممبئی میں ملاقات کی جگہ دلچسپ پارکور کے ساتھ

تو، پارکور کیا ہے؟ یہ ایک غیر مسابقتی ‘کھیل’ ہے جس میں آپ کو تخلیقی صلاحیتوں، اکروبٹکس اور انفرادی اظہار کا استمعال کر کے رکاوٹوں کو پار کرنا در کار ہوتا ہے.  اس میں بہت جرات و ہمّت کی ضرورت ہوتی ہے کیونکہ اس کو سیکھنے کے لئے بھت سے  زخموں اور درد کو برداشت کرنا پڑتا ہے. اور اندازہ کریں کہ یہ ممبئی کا راستہ بن رہا ہے!

Parkour Obstacles

“پارکور ایک بین الاقوامی نظم و ضبط، کھیل اور شوق ہے جو کہ رکاوٹوں کے باوجود، ایک مربوط حرکت میں پیش رفت کرنے کے فن کے طور پر بیان کیا جاتا ہے. اس میں حرکت کے امکانات کا تصور کرتے ہوئے ایک نئے راستہ میں ماحول کا سامنا کرنا پڑتا ہے”. اگر یہ سب آپ کے سر سے اوپر چلا جاتا ہے، تو یہ آسان اصطلاحات میں – آپ خلا میں غوطہ لگا دیتے ہو اور اپنے  اور کھلی جگہ کے درمیان واقع ساری اشیاء کو نظر انداز کر دیتے ہو.

بہت سے پارکور کمیونٹی ممبئی میں حال ہی کثرت سے آئی ہیں اور ہر کوئی اس کھیل کی تعریف کرنے کی کوشش کر رہا ہے. اگر آپ ان نوجوان کے ساتھ مشاقی کرنا چاہتے ہو، تو آپ کو سمندر کے کنارے انھیں دیکھنے کے لئے جانا ہوگا اور انکے اکروبیٹ کو استمعال کرنا ہوگا. لیکن ان دغا بازوں سے محتاط رہنا ہوگا جو بغیر کسی بھی تربیت کے نظم و نسق کی تعلیم دیتے ہیں. سب سے بہتر طبقوں میں سے فری سول اینڈ پارکور ممبئی ہے.

Parkour Practice

پارکور اپنا فیضان ڈیوڈ بیلے سے لیتا ہے، جو کہ ایک وقت میں فرانسیسی فوجی آفیسر تھا، جنہوں نے واقعی اس نظم کی وضاحت کی تھی، جبکہ جیکی چان نے اسکو مشہور کیا تھا.  اب، پارکور ایک ہالی ووڈ منڈی ہے، اور فلموں میں دیکھا جا سکتا ہے جیسے کروچنگ ٹائیگر، پوشیدہ ڈریگن، ناقابل یقین ہولک، ناممکن مشن : 3 اور ڈائی ہارڈ. بالی ووڈ میں، اداکار رتک روشن نے کریش نامی فلم میں پارکور کا استعمال کیا ہے؛ اسکے علاوہ ایک تھا ٹائیگر جیسی دیگر فلموں میں بھی استعمال کیا گیا تھا.

لیپس پر چلنے کے بجائے، آپ شہری لینڈ اسکیپ کے ذریعہ عبور کر سکتے ہو، اسکو خود کا رکاوٹ کورس بناتے ہوئے، اور اسی طرح آزادی اور جرات مندی کا میدان” جیسا کہ ایک کھلاڑی اشوک پوری نے یہ بات کہی ہے. انہوں نے مزید بتایا کہ ” بہت سے لوگ اسے شہری جمناسٹکس کہتے ہیں لیکن اس میں اس سے زیادہ فن دکار ہوتی ہے.

ممبئی میں پارکور کا داخلہ اسکے بہت سے پارکوں میں بہت زیادہ سرگرمی دیکھا سکتا ہے. اس کھیل کی مقبولیت یوٹیوب اور دیگر سوشل میڈیا چینلز کے ذریعہ عام ہوئی ہے. چونکہ کوئی انتظامی ادارہ نہیں ہے، اسلئے ہر کس و ناکس اپنے چھوٹے سے گروپ کے ساتھ شروع کر سکتا ہے. اور ہاں، ہم سے پہلے … گھر پر اس کی کوشش نہ کریں.


Leave a Comment

Required fields are marked *