Insights into simplifying train travel

پھلگو ندي- شراپ، نعمت اور عقیدے

people performing Shradh at the bank of falgu

پھلگو ندی کی سناتن اور بدھ مت دونوں ہی میں یکساں اہمیت ہے۔  یہ دریا بودھ گیا میں نرنجنا کے نام سے بھی جانی جاتی ہے.۔ جن شروتی کے مطابق اس کے کنارے پر واقع پیپل کے درخت کے نیچے بھگوان بدھ کو علم حاصل ہوا تھا۔ كرشك کنیا سجاتا نے انہیں کھیر کھلا کر درمیانہ راستہ اپنانے کا مشورہ دیا تھا۔

کیسے ہوئی مہاند پھلگو کی پیدائش
ایسا مانا جاتا ہے کہ آج سے 19 کروڑ سال کے ارد گرد آب و ہوا میں انتہائی تبدیلی کی وجہ اونچی زمین کا برف پگھل کر پانی کے بہاؤ کے طور پر دریاؤں کی شکل اختیار کر لیا۔  
تعمیر کے نظریہ سے پہلے اونچی زمین کی شکل میں- ‘گیا’ کی پس منظر تعمیر ہوئی۔ جہاں پھلگو کا گھر ہے۔

وایو پران میں بھی ہے پھلگو کی خاصیت کا ذکر
وایو پران کے مطابق پھلگو ندی سدیہی وشنو گنگا ہے۔  
پھلگو ندی شراپ اور نعمت کے دواب سے نسرت ہے۔ یہ سیتا کے ذریعہ شراپت ہے۔ سیتا کے شاپوش مہاندی بیکار، بیکار اور صفر پھلگو ہو گئی ہے۔ مگر اتفاق سے مہاندی وردان کی شکل میں ماں سیتا نے اس کی ریت کا پنڈ دے کر امر، کثیر اور بے انتہا پراسرار بھی بنا دیا اس وقت بھی اس کے ریت سے بنے پنڈدان کی ہندو مذہب میں خاص اہمیت ہے۔

یہاں واقع ہے کئی مذہبی اور تاریخی ورثہ

performing shradh with falgu's water

بودھ گیا میں اس کے ساحل پر کئی مذہبی اور تاریخی ورثہ واقع ہیں۔  ان سب میں سناتن مٹھ  اہم ہے۔ وہیں نرنجنا کے مشرقی کنارے پر سجاتاگڑھ واقع ہے۔ جو مرکزی حکومت کے محکمہ آثار قدیمہ کے ذریعہ محفوظ ہے۔ یہاں ملک و بیرون ملک کے سیاح ڈھونگیشوری سے بودھ گیا آنے کے لئے پڑاؤ ڈالتے ہیں اور پرساد میں کھیر کا پان کرتے ہیں۔  گیا سے بودھ گیا کا فاصلہ تقریبا 12 کلومیٹر ہے۔

کئی عظیم روحوں کا یہاں پنڈدان ہوا ہے
واضح رہے کہ بھگوان رام کے علاوہ يدھشٹھر، بھیشم پتامہ، مریچی وغیرہ کے ذریعہ بھی پھلگو ندی کے کنارے پنڈدان کرنے کی کہانی کؑی پرانوں میں ملتی ہے۔ نرنجنا اور منہانے کے درمیان دھرمارنیہ ویدی ہے جہاں يدھشٹھر نے اپنے پِتروں کی نجات کے لئے پِتر یگیہ کیا تھا۔ یہاں آج بھی وہ کنواں موجود ہے جس میں پِترکرنے کے بعد انہوں نے پنڈ بہائے تھے۔  گیا پنچكوشي علاقے میں دھرمارنیہ سمیت سرسوتی، ماتنگواپي تینوں پنڈ ویدی واقع ہے۔

بھگوان برہما نے برہمنوں کو دیكشا میں دیا تھا مہاند
یہ بھی مانا جاتا ہے کہ بھگوان برہما نے گیا میں یگیہ کی تکمیل کے بعد رتوگ کے لیے آئے برہمنوں کو دیكشا میں پھلگو ندی دیا تھا۔ جس میں غسل کرنے سے 21 نسل کے پِتر سیر اور آزاد ہو برهملوك کو جاتے ہیں۔ اس کا ذکر مہابھارت میں بھی کیا گیا ہے۔  اسكندپران میں مہاند پھلگو کو گیا يتر مهاپران پھلگوشچیو مہاندی کہا گیا ہے۔

سيتاكڈ ہے پِتررِن سے نجات کا مخصوص مقام

Religiouse gathring at the bank of falgu

وشنوپد مندر کے پاس واقع ویشنو شمشان کے ٹھیک سامنے مہاند پھلگو کے مشرقی کنارے ناگكوٹ پہاڑ کے مغربی دامن میں بسا سيتاكنڈ پِتررِن سے نجات کا مخصوص مقام ہے۔ سيتاكنڈ راماين دورکا زندہ اثاثہ ہے۔ قدیم واڈگمي نے سيتاكنڈ میں پنڈدان وغیرہ کا بہتر تیرتھ کہا ہے۔365 پنڈ ویدیوں میں سيتاكنڈ پنڈ ویدی سب سے اہم ہے جہاں ریت پنڈ دیا جاتا ہے۔

کیوں دیا تھا سیتا نے پھلگو کو شراپ
مذہبی کہانیوں کے مطابق بھگوان رام نے یہاں اپنے والد راجا دشرتھ کا پنڈدان کرنے آئے تھے۔ اس وقت جب رام لکشمن پنڈ اشیاء لانے گئے تھے تب چھاياروپ میں مہاراج دشرتھ نے موجود ہو سیتا سے شبھ مهورت میں پنڈ کی التجا کی۔ اور کھانے کا مطالبہ کیا۔ پنڈ اشیاء کی غیر موجودگی میں دشرتھ کے کہنے پر سیتا نے مہاندی سمیت دیگر کی موجودگی میں ریت پنڈ بنا کر دشرتھ کو عطیہ کیا تھا۔

برگد کے درخت نے دیا تھا کے ساتھ، انکار کر گئے تھے پھلگو اور دیگر

gaya braham directing people to perform shradh

سیتا کے ذریعہ پنڈدان کی بات کا رام کو یقین نہیں ہوا وہ انتہائی فکر مند اور اداس ہوئے۔ سیتا نے ثبوت کے طور پر پھلگو ندی برگد کے درخت، آگ، گائے، تلسی اور گیا براهمن سے سچ بولنے کو کہا۔ برگد کے درخت نے سچی گواہی دی، لیکن پھلگو ندی، گائے، گیا برہمن اور تلسی رام کے خوف سے انکار کرگئے۔ اس سے ناراض سیتا نے پھلگو کو شراپ دیا تھا کہ وہ گیا شہر میں اپنا پانی کھو دے گی، گائے کے جسم کے صرف پچھلے حصے کی ہی اہمیت ہوگی، گیا میں تلسی نہیں لگے گی اور گیا براهمن حاصل عطیہ سے ہمیشہ مطمئن رہے گا اور آگ کا کبھی کوئی دوست نہیں ہو گا۔وہیں سیتا نے برگد کے درخت کو دعا دیتے ہوئے کہا کہ جو بھی کوئی یہاں پنڈدان کے لئے آئے گا، وہ تمہاری بھی پوجا ارچنا ضرور کرے گا۔

Originally written by Akshoy Kumar Singh. Read here.


Leave a Comment

Required fields are marked *