Insights into simplifying train travel

ہندوستان کے بھوت زدہ 5 ریلوے اسٹیشن:

ہندوستان ریلوے دنیا میں سب سے طویل نیٹ ورک میں سے ایک ہے. یہ مسافروں کو دلکش مناظر سے لیکر خوفناک مناظر تک ہر طرح کی سہولت فراہم کرتا ہے. چند ریلوے اسٹیشن ایسے ہیں جن کو بھوت زدہ  اسٹیشنوں میں شمار کیا جاتا ہے آئیے ان میں سے 5 اسٹیشنوں سے متعارف ہوتے ہیں.

بیروگ اسٹیشن (BOF) شملہ:

Barog railway station
یہ بیروگ سرنگ یا سرنگ نمبر 33 سے قریب واقع ہے جہاں پر بہت سارے عجیب وغریب عمل وہاں کے مقامی باشندوں نے دیکھا ہے. اس سرنگ کو انگلینڈ کے ایک انجینئر نے بنایا تھا جس نے خود کشی کرلی تھی اور اس کو سرنگ کے قریب ہی دفنا دیا گیا تھا، اس کے کچھ ہی دنوں بعد، بہت سارے لوگوں کو یہ محسوس ہوا کہ اس سرنگ میں اس کے روح کا وجود ہے.

بیگوں کودور اسٹیشن، مغربی بنگال

Begunkodor railway station
اس ریلوے اسٹیشن کو 42 سالوں تک بند رکھا گیا، جب بہت سارے مسافروں نے یہ شکایت درج کرائی کہ اسٹیشن پر غیر مناسب اوقات میں عورت کی شکل میں بھوت رہتا ہے. لوگوں کا عقیدہ ہے کہ جو ایک مرتبہ بھوت کو دیکھ لیتا ہے تو وہ اسکے بعد جلد ہی مر جاتا ہے. مسافروں نے آمدو رفت بند کر دی اور ریلوے عملہ بھی وہاں سے بھاگ گیا تھا، 2009 میں ریلوے اسٹیشن کو دوبارہ کھول دیا گیا لیکن مسافروں کے دلوں سے خوف اور ڈر ابھی تک زائل نہیں ہوا ہے.

نینی اسٹیشن (NYN)، اتر پردیش

Naini railway station
ریلوے اسٹیشن کے قریب واقع نینی جیل میں، کئی حریت پسندوں] پر تشدد کیا گیا اورانکو موت کی سزائیں بھی دی گئیں. لوگوں کا یقین ہے کہ ابھی بھی اسٹیشن کے گرد ان کے اثرات ہیں اور رات میں یہ پیچھا بھی کرتے ہیں.

چتور اسٹیشن (CTO)، آندھرا پردیش

Chittoor railway station
لوگوں کا یقین ہے کہ یہ اسٹیشن ہری سنگھ نامی ایک سی آر پی ایف افسر کی روح سے بھوت زدہ ہے جن پر اکتوبر 2013 میں ان ہی کے ایک آرپی ایف اور ٹی ٹی ای یس اہلکار کے ذریعہ حملہ کیا گیا تھا. وہ چتور نامی ریلوے اسٹیشن پر اتر گئے لیکن اپنے زخم کے سامنے زندگی کی بازی ہار گیا.

لدھیانہ اسٹیشن (LDH)، پنجاب

Ludhiana railway station
یہ خیال کیا جاتا ہے بکنگ کاؤنٹر کے پاس ایک چھوٹا سا کمرہ ہے جو سبھاش نامی عہدیدار کی روح سے بھوت زدہ ہے جو 2004 میں کمرے کے اندر ہی مر گئے تھے. اس کمرے میں جو بھی بیٹھتا ہے وہ عجیب وغریب چیزوں کا مشاہدہ کرتا ہے.


One thought on “ہندوستان کے بھوت زدہ 5 ریلوے اسٹیشن:

Leave a Comment

Required fields are marked *